بلڈ کینسر کی وجوہات اور اس کا علاج

بلڈ کینسر کی وجوہات اوراس کا علاج

پاکستان میں ایک تحقیق کے مطابق ہزاروں افراد   کینسر کے مریض ہیں۔ لیکن اپنی بیماری کو چھپاتے رہتے ہیں اور ڈاکٹر سے رجوع نہیں کرتے ۔
کینسرجیسی بیماری دھوپ لگانے سے بھی پیدا ہوتی ہے، یہ بات دھوپ جیسی نعمت کے بارے میں بھی صادق آتی ہے۔

سرد علاقوں میں یہ رواج عام پایا جاتا ہے کہ لوگ دھوپ میں لیٹ کر اپنے جسم کو سورج کی شعائیں لگواتے ہیں،تاکہ جلد کی رنگت بھی قدرے سانولی ہو جائے اور اس رنگت کو نسبتا بہت پسند کرتے ہیں۔

سگریٹ نوشی کی وجہ سے بھی کینسر پیدا ہوتا ہے۔پشاب بہت اتاہے اور اس میں خون بھی اتا ہے۔
اور ایسے لوگ جو کارخانوں اور فیکٹریوں کے پاس رہتے ہیں وہ کیمیکلزاورچمڑے کے کارخانوں سے نکلنے والے فضلے کے باعث کینسر میں مبتلا ہو جاتے ہیں۔
بلڈ کینسر اس دور میں بہت زیادہ ہوگیاہے۔ جو براہ راست خون کی روانی کے نظام پر اثر انداز ہوتی ہے۔

بلڈ کینسر سے صاف خون کے خلیے کام کرنا چھوڑ دیتے ہیں ۔اس سے بھوک بہت کم لگتی ہے وزن تیزی سے کم ہونا شروع ہو جاتا ہے ,الٹیاں بہت زیادہ ہوتی ہیں اور آنتوں کے قدرتی فعل میں فرق ہو جاتا ہے۔

انفیکشن کا صحیح نہ ہونا اور بار بار بخار ہونے لگ جاتا ہے ۔اگر اس میں سے کوئی ایک بھی علامت آپ کو نظر آئے تو فوراً ڈاکٹر سے رجوع کریں۔
اس کے علاوہ کھانوں کو دیر سے محفوظ کرنے والے کیمیکلز کا بے جا استعمال کرنا بلیڈ کینسر کی وجہ بنتا ہے۔
وہ لوگ جو فصلوں پر کیڑے مار ادویات کا اسپرے کرتے ہیں وہ بھی بلڈ کینسر میں مبتلا ہوتے ہیں۔

cancer :بلیڈ کینسرکا علاج

اس مرض میں مریض کو سرخ خلیے اور پلیٹلٹس کے ڈراپس چڑھائی جاتی ہیں۔
انفیکشن دور کرنے کے لیے اینٹی باؤٹکس دی جاتی ہے.

مریض کا یوریک ایسڈ ٹھیک ہو تو اس صورت میں تھراپی کی جاتی ہے ۔ان تھراپی میں کیموتھراپی, ریڈیشن تھراپی اوربائیلوجیکل تھراپی شامل ہیں۔
شہد اور جڑی بوٹیوں کو مکس کر کے استعمال کرنے سے بھی کینسر کا خاتمہ ہونے کے چانس ہوتے ہیں۔

Advertisement
Please follow and like us: